Sunday, November 21, 2010

Opinion Tribe, رائے کا قبیلہ



کہیں پڑھا یا کسی سے سنا تھا کہ رائے بنیادی اہمیت رکھتی ہے۔یہ انسان کے تجربوں،مشاہدات اور زندگی کا نچوڑ ہوتی ہے۔جاننے والے اس کی بنیاد پر آپ کی شخصیت،مزاج،انداز،عادات واطوار کو جان لیتے ہیں۔
اور اس کا سبب یہ ہے کہ ہم جو کچھ سنتے،سمجھتے اور اخزکرتے ہیں وہ اظہار کے لئے رائے کی شکل اختیار کر لیتا ہے۔ یہ اظہار ہمارے ماضی کوسب کے سامنے کھلی کتاب بنا دیتا ہے۔ یہ ایسی جنس ہے جو ہرچہرے پر چڑھے تمام نقاب اتار پھِنکتی ہے۔اندر کے انسان کو آشکار کر دیتی ہے۔دل میں چھپی ہوئی بھاونائوں کوزبان کے ذریعے سامنے والے پر ظاہر کر دیتی ہے۔مختلف ٹرکس اور ٹیکنیکس کی بنیاد پر اپنے آپ کو چھپانے کی ہر کوشش ناکام ہو جاتی ہے۔
اتنی بنیادی اہمیت رکھنے والی چیز کو پھر بھی ان جگہوں پر اہمیت نہیں دی جاتی جہاں اسے اہم سمجھا جانا چاہئے۔نہ جانے کیوں مرضی کے خلاف الفاظ سن کر ہم منہ موڑ لیتے ہیں۔کان بند کر لیتے ہیں اپنے سوچنے اور سمجھنے کی صلاحیت کو کند تصور کر لیتے ہیں۔بے عقلی اور اخلاقی دیوالیہ پن کے سمند سے نکل کرجہالت کے صحرا میں کھڑے ہو جاتے ہیں۔اہمیت دینے کی جگہوں پر اہمیت نہ دینے کا نتیجہ یہ نکلتا ہے کہ ہمارے جیسے عام انسان بھِ اس کا گلا گھونٹنا شروع کر دیتے ہی۔جس سے خوفناک حبس ذدہ موسم پیدا ہوتا اور معاشرے سے ہر مثبت وتعمیری چیز کو ختم کر دیتا ہے۔
ایسا صرف انہی کے ساتھ نہیں ہوتا جو بے معنی زندگی جیتے ہیں بلکہ ان کے ساتھ بھی ہوتا ہے جو مقصد تو رکھتے ہیں لیکن اچھائی کو یہ جان کر کسی سے شئیر نہیں کرتے کہ خزانہ خالی ہو جائے گا۔اور درحقیقت یہ دوسرا گروہ اس بات کا ذیادہ ذمہ دار ہوتا ہے کہ اسے قصوروار جانا جائے۔
نتیجہ ؟نتیجہ ایسی تباہی کی صورت سامنے آتا ہے جو مایوسی،خود کشییوں،بے معنی چیزوں کو زندگی کا مقصد بنا کر آگے بڑھنے کی دوڑ میں شریک ہونے،وژن سے محروم ہو جانے کی آلائشوں سے سجی ہوتی ہے۔
یہ سب سوچ کر میں اس نتیجے پر پہنچا کہ رائے کو دوسروں سے شئیر کیا جائے۔تاکہ اس میں کہیں خرابی ہو تو اصلاح ہو جائے اور اگر بہتری ہو تو بھلائی کو آگے بڑھایا جائے۔تاکہ دوسرے گروہ میں شمولیت سے بچا جا سکے۔تاکہ لاشعور کی گہرائیوں میں گم ہو جانے والی "رائے"کو تلاش کر کےباہر نکالا اور اس کو استعمال کرتے ہوئے مثبت،تعمیری اورسب کے لئے فائدہ مند تبدیلی کو پروڈکٹ کی صورت بیچا نہیں حقیقت میں روبعمل لایا جا سکے۔
رائے کے اظہار کا یہ بنیادی حق استعمال کرنے کو ہی Opinion Tribe"رائے کا قبیلہ"ترتیب پایا ہے۔
یہ کیا اور کیوں ہے؟،میں نے بتا دیا۔ کیسا ہےاور کیسا ہونا چاہئے؟آپ کی رائے پر منحصر ہے۔توقع ہے کہ اپنی رائے سے ضرور آگاہ کریں گے تا کہ
اچھے اور اچھا ئی کو جاننے اور برے اور برائی کوپہچاننے کے لئے ہماری رائے بھی کار آمد ہو سکے۔


No comments:

Post a Comment